Connect with us

News

سپریم کورٹ نے آئی جی اسلام آباد کے تبادلہ معطلی کا حکم واپس لے لیا

Published

on

اسلام آباد: (مانیٹرنگ ڈیسک) سپریم کورٹ نے آئی جی اسلام آباد کے تبادلے کی معطلی کا حکم واپس لے لیا۔ عدالت نے وفاقی وزیر اعظم سواتی کو نوٹس جاری کر دیا۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ ٹیلیفون نہ اٹھانے پر پولیس سربراہ کو تبدیل کر دیا گیا، وضاحت کریں کیوں نہ اعظم سواتی کو نااہل کر دیا جائے، غیرمساوی لوگوں میں صلح نہیں ہوسکتی، جائیداد کی مکمل تحقیقات کرائیں گے۔سپریم کورٹ میں آئی جی اسلام آباد تبادلہ ازخود نوٹس کیس کی سماعت ہوئی۔ اعظم سواتی کے وکیل علی ظفر عدالت میں پیش ہوئے۔ چیف جسٹس نے ریماکس دیئے کہ آئی بی، ایف آئی اے اور نیب پر مشتمل جے آئی ٹی بنانے لگا ہوں، تینوں متعلقہ ادارے جے آئی ٹی کے لیےنام دیں، آج ہم ادھر ہی بیٹھے ہیں، فیصلہ کر کے جائیں گے، آئی جی بتائیں مقدمہ کیوں درج نہیں کیا ؟ جو عام لوگوں کے ساتھ سلوک ہوتا ہے وہی ان کے ساتھ ہونا چاہیئے، قانون دیکھیں اعظم سواتی کا مقدمہ درج ہو سکتا ہے یا نہیں ؟۔متاثرہ شخص نے عدالت کو بتایا کہ میں ملک کی عزت کیلئے اعظم سواتی کو معاف کرتا ہوں۔ چیف جسٹس نے کہا ہم اس معاملے پر کوئی سمجھوتہ نہیں کریں گے، چلیں تفتیش رہنے دیں، آرٹیکل 62 ون ایف کا اطلاق کر دیتے ہیں، ہم ظالم کے ظلم کو روکنا چاہتے ہیں، بچے یہ نہ سمجھیں کہ وہ تھرڈ کلاس شہری تھے، نیک، پارسا، صادق و امین کون ہوتا ہے، تفصیلی فیصلہ موجود ہے، اس ملک کو چلانے کیلئے ایماندار لوگ چاہئیں۔

Continue Reading
Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Trending

Copyright © 2018 PAKISTAN FOCUS.